Management & Organisation

پیکز خواہشمند ہے قائدانہ پوزیشن لینے کی ہر اس کام میں جو ہم کرتے ہیں۔ ہم تسلیم کرتے ہیں ہماری تاریخی قیادت سے ہم تک منتقل کی گئی قائدانہ صلاحیات کے باعث ایسا ممکن ہوا۔ ہمار ے ماضی کے عظیم راہنماؤں نے قائدانہ صلاحیتوں کا ایسا نمونہ قائم کردیا ہے جس پر ہم آج بھی گامزن ہیں ۔ محبت کی ہماری میراث 1956 کے بعد سے ہمارے قائدانہ نمونے کی وضاحت کرتی ہے۔
سالمیت، جذبہ، ہمت، ثابت قدمی، احساس اور عاجزی یہ وہ قائدانہ اقدار ہیں جس کی بنا پر ہم اپنے راہنماؤں سے توقع کرتے ہیں کہ اپنے آج کو بہتراور آنے والے کل کو اپنی مٹھی میں کریں گے ۔ پیکجز کی اسی عظیم روایت کو قائم رکھتے ہوئے ہم اپنے آج کے قائدین سے یہ امید رکھتے ہیں کہ وہ اپنے جیسے اور قائدین تیار کریں۔

قیادت

بورڈ آف ڈایئریکٹرز

انتظامیہ

 مینجمنٹ کمیٹی

ایگزیکٹوکمیٹی

ایگزیکٹو کمیٹی کمپنی کے روزمرہ امور کی نگرانی اور تمام اہداف کی انجام دہی کے لئے بااختیار ہے ماسوائے ان امور کے جو کمپنیز ایکٹ 2017 کے سیکشن 183 کے تحت بورڈ کی جانب سے انجام دیئے جاتے ہیں۔ ایگزیکٹو کمیٹی پہلے سے طے کردہ اغراض و مقاصد، کاروبار کے تجارتی فیصلوں اور سرمایہ کاری و فنڈنگ کی ضروریات کے تحت کمپنی کی آپریٹنگ کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے باقاعدگی سے اجلاس منعقد کرتی ہے۔ ایگزیکٹو کمیٹی کاروباری حکمت عملی کی تشکیل، خطرات کا جائزہ لینے اور ان کے تدارک کے منصوبے بنانے کے لئے بھی ذمے دار ہے۔

بزنس اسٹریٹجی کمیٹی

آڈٹ کمیٹی

آڈٹ کمیٹی کے ٹرمز آف ریفرنس پاکستان میں لسٹڈ کمپنیوں کے لئے مروجہ کوڈ آف کارپوریٹ گورنینس سے اخذ کئے جاتے ہیں۔ آڈٹ کمیٹی دیگر امور سمیت کمپنی کے شیئر ہولڈرز کی جانب سے ایکسٹرنل آڈیٹرز کی تقرری کے سلسلے میں بورڈ آف ڈائریکٹرز کو سفارشات دینے اور ایکسٹرنل آڈیٹرز کے مستعفی ہونے یا انہیں برطرف کرنے کے ضمن میں کسی بھی استفسارات پر غور کرنے، ایکسٹرنل آڈیٹرز کی جانب سے کمپنی کے لئے اس کے مالیاتی حسابات کے آڈٹ کے علاوہ کسی دیگر سروس کی فراہمی اور آڈٹ فیس کے سلسلے میں ذمے دار ہے۔ کسی مضبوط جواز کے نہ ہونے کی صورت میں بھی بورڈ آف ڈائریکٹرز ان تمام امور کے سلسلے میں آڈٹ کمیٹی کی سفارشات پر کام کرتے ہیں۔

آڈٹ کمیٹی کے ٹرمز آف ریفرنس میں درج ذیل بھی شامل ہیں:

      کمپنی کے اثاثہ جات کے تحفظ کے ضمن میں درست اور مناسب اقدامات کا تعین۔

       کمپنی کے سہ ماہی، ششماہی اور سالانہ مالیاتی حسابات کا بورڈ آف ڈائریکٹرز کی منظوری دینے سے قبل جائزہ لینا جس میں درج ذیل امور پر نگاہ رکھی جاتی ہے۔

        کلیدی فیصلہ کن شعبے۔

        آڈٹ سے حاصل کردہ نمایاں ایڈجسٹمنٹس۔

         جاری ادارہ جاتی پیشگوئیاں اور توقعات۔

        اکائونٹنگ پالیسیوں اور طریقہ کار میں کسی نوعیت کی تبدیلیاں۔

       نافذالعمل اکائونٹنگ اسٹینڈرڈز پر عملدرآمد۔

      لسٹنگ ریگولیشنز اور دیگر قانونی اور ریگولیٹری شرائط پر عملدرآمد: اور

        اہم متعلقہ پارٹی ٹرانزیکشنز۔

        اشاعت سے قبل نتائج کے ابتدائی اعلانات کا جائزہ۔

         ایکسٹرنل آڈٹ کے لئے سہولت فراہم کرنا اور عبوری اور حتمی آڈٹ اور ایسے کسی بھی معاملے کے بارے میں اٹھنے والے اہم مشاہدات کے ضمن میں ایکسٹرنل آڈیٹرز کے ساتھ بات چیت جو آڈیٹرز واضح کرنے کے خواہشمند ہوں (انتظامیہ کی عدم موجودگی میں جہاں ضروری ہو)۔

        ایکسٹرنل آڈیٹرز کی جانب سے جاری کردہ انتظامی خط اور اس پر انتظامیہ کے ردعمل کا جائزہ۔

        کمپنی کے انٹرنل اور ایکسٹرنل آڈیٹرز کے مابین روابط کو یقینی بنانا۔

         اسکوپ اور انٹرنل آڈٹ اور اس کی حد کا جائزہ اور اس امر کو یقینی بنانا کہ انٹرنل آڈٹ کے امور مناسب وسائل کے حامل ہیں اور کمپنی کے اندر درست طور پر استعمال کئے جارہے ہیں۔

        فراڈ، کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے ضمن میں واضح کردہ سرگرمیوں کی اندرونی تحقیقات کے کلیدی نتائج اور ان پر انتظامیہ کے ردعمل کا جائزہ لینا۔

        اس امر کا تعین کرنا کہ انٹرنل کنٹرول سسٹمز بشمول مالیاتی اور آپریشنل کنٹرولز، خریداریوں اور سیلز کی بروقت اور درست ریکارڈنگ کے لئے اکائونٹنگ سسٹمز، وصولیاں اور ادائیگیاں، اثاثہ جات اور مالی ذمے داریاں اور رپورٹنگ اسٹرکچر درست اور موثر ہیں۔

       انٹرنل کنٹرول سسٹمز پر بورڈ آف ڈائریکٹرز کی جانب سے توثیق اور انٹرنل آڈٹ رپورٹس سے قبل کمپنی کے اسٹیٹمنٹ کا جائزہ لینا۔

      خصوصی پروجیکٹس کی تشکیل، مالیاتی جائزوں کے لئے قدر و قیمت یا بورڈ آف ڈائریکٹرز کی جانب سے نشاندہی کرنے پر چیف ایگزیکٹو آفیسر کی مشاورت کے ساتھ دیگر تحقیقات اور ایکسٹرنل آڈیٹرز یا کوئی دیگر بیرونی ادارے کے ضمن میں زرترسیل کے امور پر غور و خوض۔

       متعلقہ قانونی شرائط پر عملدرآمد کے سلسلے میں امور کا تعین۔

      کارپوریٹ گورنینس کے بہترین طریقہ پر عملدرآمد کی نگرانی اور اہم خلاف ورزیوں کی نشاندہی: اور

      کسی بھی دیگر معاملے یا امور پر غور و خوض جو بورڈ آف ڈائریکٹرز کی جانب سے تفویض کیا جائے۔

ہیومن ریسورس اور ری میونریشن (ایچ آر اینڈ آر) کمیٹی

کمیٹی درج ذیل امور کے لئے ذمے دار ہے:

        بورڈ کے لئے انسانی وسائل کی انتظامی پالیسیوں کے ضمن میں سفارشات تیار کرنا۔

       سی ای او کے انتخاب، جانچ پڑتال، مشاہرے (بشمول ریٹائرمنٹ پر فوائد) اور جانشینی کی منصوبہ بندی کے ضمن میں بورڈ کو سفارشات دینا۔

         چیف فنانشل آفیسر، کمپنی سیکریٹری، ہیڈ آف ہیومن ریسورس، ہیڈ آف پیکیجنگ، اشیائے صارف کے ڈویژن کے سربراہ، انجینئرنگ کے سربراہ اور انٹرنل آڈٹ کے سربراہ کے انتخاب، جانچ پڑتال اور مشاہرے (بشمول ریٹائرمنٹ کے فوائد) کے سلسلے میں بورڈ کو سفارشات کی فراہمی: اور

       سی ای او کو براہ راست رپورٹ کرنے والے کلیدی انتظامی عہدوں پر فائز افسران کے سلسلے میں ضروری امور کے بارے میں سی ای او کی سفارشات پر غور و خوض اور منظوری۔

سسٹم اور ٹیکنالوجی کمیٹی

یہ کمیٹی درج ذیل امور کی نگرانی کرتی ہے:

   ادارے کے اندر آئی ٹی اسٹریٹجی وضع کرنا تاکہ کمپنی کے تمامتر انفارمیشن سسٹمز کو تیز رفتاری کے ساتھ تبدیل ہوتے ہوئے اینوائرمنٹ کے مطابق برقرار رکھا جاسکے۔ یہ کمیٹی انٹر پرائز ریسورس پلاننگ (ای آر پی) سولوشنز اور گرین آفس پروجیکٹ کے ضمن میں کمپنی کے تمامتر اہداف کے حصول کے لئے ڈیٹا آرکائیونگ سولوشنز کی جانچ کے لئے بھی ذمے دار ہے۔

     انتظامیہ کی جانب سے تجویز کردہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کی تجاویز کا جائزہ لینا اور سفارشات تیار کرنا۔

      ٹیکنالوجی اور متعلقہ تحقیقی کام میں سرمایہ کاری کے لئے ضروریات پر تمام اسٹیک ہولڈرز کو آگاہی کا فروغ: اور

       کمپنی کے سسٹمز اور طریقہ کار پر نظرثانی اور جائزہ لینا، ٹیکنالوجی میں جدت طرازیوں بشمول پلانٹ اپ گریڈیشن، ٹیکنالوجی میں بہتری وغیرہ کے بارے میں متعلقہ مالیت کے فوائد کے جائزوں کے ساتھ تجاویز تیار کرنا۔

ہماری کمپنی کا مکمل سٹرکچر دیکھنے کے لیے تصویری خاکہ ملاحظہ کریں